آنکھوں کو خطرناک شعاعوں سے محفوظ رکھنے والی عینک

Mi Anti-Blu-Ray Glasses آنکھوں کو خطرناک شعاعوں سے محفوظ رکھنے والی عینک چائینہ کی ایک مشہور و معروف ٹیکنالوجی کمپنی شیاؤمی آئے دن جدید ترین اسمارٹ ہوم اپلائنسس متعارف کرواتی رہتی ہے اور حال ہی میں کمپنی نے ایک ایسی عینک صارفین کے لیے پیش کی ہے جس سے آنکھیں خطرناک شعاعوں سے محفوط رہیں

JA Solar launches 800 W solar panel

JA Solar Launches 800 W Solar Panel The new product, currently the foremost powerful panel on the market, was showcased at the SNEC PV Power Expo in Shanghai. Also presented at the fair was a 780 W product from Tongwei and a 660 W module from Trina. The 14th SNEC photovoltaic exhibition and conference held

دنیا کے سب سے تیز ترین الیکٹرک جہاز کا کامیاب تجربہ

دنیا کے سب سے تیز ترین الیکٹرک جہاز کا کامیاب تجربہ دنیا کی مہنگی ترین گاڑیاں بنانے والی مشہورو معروف کمپنی رولس رائس نے جدید ترین ٹیکنالوجی سے مزین دنیا کے سب سے تیزالیکٹرک جہاز کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق دنیا کے سب سے تیز ترین الیکٹرک جہاز

کچھ نیا کرنیکی کوشش؟ شادی پر اس خطرناک فوٹو کا انجام کیا ہوا؟

کچھ نیا کرنیکی کوشش؟ شادی پر اس خطرناک فوٹو کا انجام کیا ہوا؟ اپنی شادی پر کچھ نیا کرنے خواہش تو ہر جوڑے کی ہوتی ہے اور اسے یادگار بنانے کے لیے دنیا بھر میں اکثر لوگ مشہور و معروف اور مہنگے ترین فوٹوگرافرز کی خدمات حاصل کرتے ہیں۔ لیکن اس دنیا میں کچھ شادی

جاپانی کمپنی نے آفات کے موقع پر موبائل فون سہولت بحال کرنے والا ڈرون تیار کر لیا

جاپانی کمپنی نے آفات کے موقع پر موبائل فون سہولت بحال کرنے والا ڈرون تیار کر لیا

ٹوکیو : جاپان میں ایک بڑی موبائل فون کمپنی نے ایک ایسا ڈرون تیار کر لیا ہے جو سمندری طوفانوں اور دیگر قدرتی آفات سے متاثر ہ والے علاقوں میں موبائل فون سہولت تیزی کے ساتھ بحال کر سکتا ہے۔

سافٹ بینک کے حکام کا کہنا ہے کہ ان کا ابتدائی ڈرون موقع پر پہنچنےکر ایک گھنٹے کے اندر اندر موبائل فون کے رابطے بحال کر سکتا ہے۔ اس کمپنی کے موبائل آلات کو 10 کلومیٹر کے دائرے کے اندر موجود تقریباً دو ہزار لوگ ایک ہی وقت میں استعمال کر سکیں گے، یہ ڈرون تقریباً 50 گھنٹوں سے بھی زیادہ فضاءمیں رہ سکتا ہے۔

حکّام نے ہنگامی حالات میں استعمال کیلئے ایک اور ڈرون بھی دکھایا جو لاپتہ افراد کو ان کے موبائل فون کے بھیجے گئے مقام کا کھوج لگانے والے ڈیٹا کے ذریعے ڈھونڈتا ہے، یہ کہیں دبے ہوئے موبائل فونز کی نشاندہی بھی کر سکتا ہے۔

جاپانی کمپنی نے آفات کے موقع پر موبائل فون سہولت بحال کرنے والا ڈرون تیار کر لیا

Visit To News Source Web Page:

جاپان کا پرواز کرنے والی کار کے کامیاب تجربے کا دعویٰ

جاپان کا پرواز کرنے والی کار کے کامیاب تجربے کا دعویٰ

گوگل اور اوبر سمیت جرمنی، فرانس، جاپان، امریکا، سوئٹزرلینڈ اور چین کی کئی کمپنیاں ایسی کاریں تیار کرنے میں مصروف ہیں جو کہ  نہ صرف اڑنے کی صلاحیت رکھیں  گی بلکہ وہ پیٹرول ‘ ڈیزل کی بجائے بجلی پر چلیں گی۔گاڑیاں تیار کرنے والی کمپنیوں میں جاپانی کمپنی اسکائے ڈرائیو انشورنس بھی ہے، جس نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ ان کی بنائی ہوئی چھوٹی پرواز کرنے والی گاڑی یعنی کار کو اڑانے کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے۔امریکی اقتصادی جریدے فوربز نے اپنی رپورٹ کو شایہ کرتے ہوے اس میں بتایا گیا ہے کہ جاپان کار ساز کمپنی ٹویوٹا کی معاونت سے چلنے والی نئی کمپنی اسکائے ڈرائیو انشورنس نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے اڑنے والی کار کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے۔

 

اسکائے ڈرائیو انشورنس کمپنی نے پرواز کرنے والی کار کو اڑانے کی مختصر ویڈیو بھی جاری کی، جس میں ہیلی کاپٹر کی طرح کی کار کو زمین سے 5 فٹ کی بلندی تک کم رفتاری میں اڑتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔اس ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ کار کا ڈیزائن بلکل ہیلی کاپٹر جیسا ہی ہے پر اس میں صرف ایک ہی شخص کے بیٹھنے کی گنجائش رکھی گئی ہے۔ جب کہ کار فرنٹ پر ہیلی کاپٹر کی طرح چھوٹے پربھی لگائے گئے ہیں۔

 

اسکائے ڈرائیو کمپنی کے مطابق ابتدائی تجربے میں کار کو ٹویوٹا کی تجرباتی فیلڈ میں 4 منٹ تک زمین سے تھوڑی سی بلندی پر ہی اڑایا گیا تاہم کمپنی آنے والے وقت میں اس کی اڑنے کی صلاحیت میں مزید بہتری لاکر اسے مسلسل 30 منٹ تک اڑنے کے قابل بنا لے  گی۔جاپانی کمپنی نےاس کار کو ایس ڈی تھری کا نام دیا ہے جو دکھنے میں اسٹار وارز فلم میں دکھائی گئی پرواز کرنے والی کاروں جیسی ہی  ہے۔جس کی وڈیو آپ نیچے ملاحضہ کر سکتے ہیں۔

https://www.youtube.com/watch?v=WhzmR07WeKU

کمپنی گزشتہ 8 سالوں سے ایسی کار بنانے میں مصروف تھی اور اب کمپنی نے کار کے ابتدائی کامیاب تجربے کے بعداس بات کا امکان ظاہر کیا ہے کہ 2023 تک اس کار کو فروخت کے لیےمارکیٹ میں پیش کیا جائے گا یا پھر اس کار کوکمرشل بنیادوں پر چلایا جا سکے گا۔اسکائے ڈرائیوکمپنی کے مطابق اس کار کی اڑنے کی صلاحیت کو30   منٹ تک بڑھانے اور اسے 30 فٹ کی اونچائی تک اڑانے کے قابل بنانے کے بعد اس کی آزمائشی اڑان کو بڑھایا جائے گا، جس کے بعد ہی کمپنی اس کار کو فروخت کرنے یا پھر نہ کرنے کا فیصلہ کرے گی۔

 

یاد رہے کہ جاپانی کمپنی کی جانب سے 2017 میں ایک جرمن کمپنی نے بھی ایک کار کو اڑانے کا کامیاب تجربہ کیا تھا تاہم ابھی تک اس گاڑی میں مزید کوئی بہتری نہیں آ سکی۔اور اسی طرح جنوری 2019 میں امریکی ریاست ورجینیا میں بھی بوئنگ کمپنی کی بنائی گئی پروان کرنے وایل کار کو اڑانے کا کامیاب تجربہ کیا گیا تھا۔

رواں ماہ 26 اگست کو خبر سامنے آئی تھی کہ امریکی ایئر فورس نے اپنی ہی تیار کردہ کار کو اڑانے کا کامیاب ابتدائی تجربہ بھی کیا ہے اور یہ خیال کیا جا رہا ہے کہ ایئرفورس کی اس اڑنے والی کار کو بھی 2023 تک عام سواری کے لیے پیش کیا جائے گا۔

First Electric Vehile Charging Station opened in Islamabad

First Electric Vehicle Charging Station opened in Islamabad.

The first Electric Vehile Charging Station opened in Islamabad launched and found out few days back within the federal capital of Islamabad has been made functional. Electric Vehile charging station has been found out here at the Pakistan State Oil (PSO), F-7 Markaz by Barqtron Energy Company .The charging station was made functional after successful completion of supply, installation and commissioning of First Electric Vehicle (EV) Charger for PSO.The spokesman of the Ministry of Science and Technology termed this initiative as a welcoming move for the country which would soon witness electric vehicles playing on its roads.

According to the recent tweet of Federal Minister for Science and Technology, Chaudhry Fawad Hussain, the opening of EV (E-vehicles) charging station would help encourage electric vehicles as future transportation.The minister also stated that there would be only one percent duty on the establishment of EV’s Manufacturing Units in Pakistan.While the Ministry of Science and Technology is additionally performing on a policy to shift vehicles on battery within the future.

According to the recent tweet of Federal Minister for Science and Technology Fawad Hussain, the opening of EV charging station would help encourage electric vehicles as future transportation.

The charging station was made functional after successful completion of supply, installation and commissioning of electrical vehicle (EV) charger for PSO.

The Ministry of Science and Technology’s spokesperson termed the initiative as a welcoming move for the country which might soon witness electric vehicles plying on its roads.

He also said that there would be just one duty on the establishment of EV’s manufacturing units in Pakistan. “The Ministry of Science and Technology is additionally performing on a policy to shift vehicles on battery within the future.”

Passed on June 10, the new policy was originally approved by Prime Minister Imran Khan in November, with the goal of cutting pollution and curbing global climate change .

It aims to bring half 1,000,000 electric motorcycles and rickshaws, along side quite 100,000 electric cars, buses and trucks, into the transportation over subsequent five years.

The goal is to possess a minimum of 30% of all vehicles running on electricity by 2030.

Revolutionary Change In IT Sector Dagger Optical Fiber Starts Work From Now To Islamabad

Revolutionary change in IT sector, dagger Optical fiber starts work from now to Islamabad (Optical fiber In Pakistan)

Chairman Of C-Pac Authority Asim Saleem Bajwa Has given good news in his tweet that optical fibre has started work from Khanjarab to Islamabad.(Optical fiber In Pakistan)

Chairman Pak-China Economic Corridor (C-Pac) Lieutenant General (retd) Asim Saleem Bajwa said that in the next phase fibre will be laid from Islamabad to Karachi. Revolutionary steps are being taken in the field of tea. Under the Digital Highway Plan from Islamabad to Gwadar, fibre optics will be activated.

He said that the Central Development Working Party has approved Rs 26 billion for the 146 km long Hoshab to Awaran road. He said that this highway in the remote districts of Ketch and Awaran is a ray of hope for the backward South Balochistan. And the lives of the people in these areas will change. In another tweet, Asim Saleem Bajwa said that the construction of an international airport in Gwadar at a cost of 23 230 million is in full swing. With the construction of Gwadar Airport, the city will enter a new era of development.

He said that Gwadar city is of central importance under the Pak-China Economic Corridor project. Gwadar also needed an international airport. Construction of Gwadar International Airport started last year and work on the project is in full swing. Asim Saleem Bajwa said that the world’s largest passenger plane A380 also landed on the runway of Gwadar’s state-of-the-art airport. There will be a flight facility.Revolutionary change in IT.

How to Calculate Power Consumption Of 1 Ton And 1.5 Ton Ac

It’s chilling summer and most of us might be planning to purchase AC and doing internet research. But the main thing which comes to our mind is the power consumption of AC. As this have a significant effect on our pocket. This post outlines, EER (Energy Efficiency Ratio),  therefore the method to calculate the facility